ندائے یارسولَ اللہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم

  • کیا یارسولَ اللّٰہ، یا نبیَّ اللّٰہ کر پکار سکتے  ہیں ؟
  • اس کی کیا دلیل ہے ؟


سوال :
  کیاہم اپنے  پیارے  آقا صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰ لِہٖ وَسَلَّم کو یارسولَ اللّٰہ، یا نبیَّ اللّٰہ کہہ کر پکار سکتے  ہیں، ایسا کرناشرک تو نہیں؟

جواب : نبیوں کے  سرور، محبوبِ ربِّ داور صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰ لِہٖ وَسَلَّم کو یارسولَ اللّٰہ، یا نبیَّ اللّٰہ! صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰ لِہٖ وَسَلَّم وغیرہ الفاظ و القاب کے  ساتھ نزدیک و دُور سے  پکارنا بالکل جائز ہے ، ہرگز شرک نہیں ۔

 

سوال : اس کی کیا دلیل ہے ؟

جواب : قرآنِ مجید سے  ثبوت

قرآنِ کریم میں بہت سے  مقامات پر اللّٰہ تعالیٰ نے  حضور صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰ لِہٖ وَسَلَّم کو نداء فرمائی ۔( یٰۤاَیُّهَا النَّبِیُّ )، ( یٰۤاَیُّهَا الرَّسُوْلُ)، ( یٰۤاَیُّهَا الْمُزَّمِّلُۙ(۱) )، ( یٰۤاَیُّهَا الْمُدَّثِّرُۙ (۱) ) وغیرہ ان تمام آیات میں  حرفِ ندا ’یا‘ کے  ساتھ حضور عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَ السَّلَام کو خطاب فرمایا ہے  ۔

Tabligh - Copyright 2021. Designed by Nauthemes